Sunday, 1 April 2012

☺☺☺ کبھی لازوال تھے ہم بھی ☺☺☺

کسی کا عشق کسی کا خیال تھے ہم بھی
گئے دنوں میں بہت با کمال تھے ہم بھی

ہماری کھوج میں رہتی تھیں تتلیاں اکثر

کہ اپنے شہر کا حسن جمال تھے ہم بھی

زمیں کی گود میں سر رکھ کر سو گئے آخر

اس کے ہجر میں کتنے نڈھال تھے ہم بھی

ہم عکس عکس بکھرتے رہے اسی دھن میں

کی زندگی میں کبھی لازوال تھے ہم بھی

No comments:

Post a comment