Thursday, 14 July 2011

تم سبھی کچھ ہو بتاؤ تو مسلمان بھی ہو

بسم اللھ الرحمن الرحیم
اسلام علیکم -
اللہ نے بنی اسرائیل کو فرعون سے نجات دی - ان کے سامنے آل فرعون کو غرق کیا - سمندر میں سے حفاظت سے گزارا - لیکن ان کے اکثر لوگ حضرت موسیٰ علیہ السلام کی نافرمانی کرتے رہے - انہوں نے بچھڑے کو معبود بنایا - جس کی اللہ نے انہیں سزا دی - انہوں نے ہفتے کے دن کی خلاف ورزی کی - جس کی اللہ نے انہیں سزا دی - آج بھی جن بنی اسرائیل نے اسلام سے کفر کیا ہے وہ دنیا کی زندگی کو ہی سب کچھ سمجھتے ہیں - مسلمانوں کا مذاق اڑاتے ہیں - ان پر ظلم کرتے ہیں - جس کی تازہ مثال فلسطین پر اسرائیل کا حملہ ہے - مگر قیامت کے دن اللہ ایمان والوں کو ہی عزت دے گا - فلسطین کے شہیدوں کے ایک ایک زخم کا ظالموں سے حساب لے گا - ہمارے جو مسلمان انگریزوں کی تعریفیں کرتے ہیں - کیا اب بھی ان کی آنکھیں نہی کھلیں ؟ ؟ کیا امریکہ اور برطانیہ کی مدد کے بغیر اسرائیل کی کوئی طاقت ہے ؟ ؟ ؟
بقول علامہ اقبال

منفعت ایک ہے اس قوم کی نقصان بھی ایک
ایک ہی سب کا نبی علیہ السلام ، دین بھی ، ایمان بھی ایک
حرم پاک بھی ، اللہ بھی ، قرآن بھی ایک
کچھ بڑی بات تھی ہوتے جو مسلمان بھی ایک

فرقہ بندی ہے کہیں اور کہیں ذاتیں ہیں
کیا زمانے میں پنپنے کی یہی باتیں ہیں ؟

شور ہے ہو گئے دنیا سے مسلمان نابود
ہم یہ کہتے ہیں کہ تھے بھی کہیں مسلم موجود ؟
وضع میں تم ہو نصاریٰ ، تو تمدن میں ہنود
یہ مسلماں ہیں جنہیں دیکھ کے شرمائیں یہود

یوں تو سید بھی ہو ، مرزا بھی ہو ، افغان بھی ہو
تم سبھی کچھ ہو بتاؤ تو مسلمان بھی ہو "

1 comment:

  1. يہی کہنا تو جُرم ٹھہرا عصرِ حاضر ميں

    ReplyDelete